خرم شیر زمان نے چیئرمین نیب سے ایسا مطالبہ کردیا کہ سندھ حکومت کے ہوش اڑ جائیں 1

خرم شیر زمان نے چیئرمین نیب سے ایسا مطالبہ کردیا کہ سندھ حکومت کے ہوش اڑ جائیں

By

کراچی: تحریک انصاف(پی ٹی آئی) کراچی کے صدر اور رکن صوبائی اسمبلی خرم شیر زمان نے سندھ میں واٹر سپلائی سکیموں میں4ارب سےزائد کی کرپشن پرقومی احتساب بیورو(نیب)سےتحقیقات کامطالبہ کرتے ہوئےکہا کہ سندھ میں پانی کی رنگ برنگی سکیموں کےنام پرصرف عوام کی امیدوں پرپانی پھیرا جاتاہے،بلاول ماہرحساب کتاب بننے سے پہلے سندھ کی کرپشن کا حساب بھی رکھا کریں،پیپلز پارٹی نئی سکیمیں متعارف کرواکے اپنی کرپشن کے راستے آسان بنارہی ہے۔

تفصیلات کے مطابق  خرم شیر زمان نےکہا کہ پیپلز پارٹی کی سکیموں سے عوام کی بجائے وزراءاستفادہ حاصل کرتے ہیں، پانی کی قلت پر حسب عادت بلاول نے وفاق پر الزامات لگائے،بلاول حقائق کو توڑ مروڑ کر پیش کرنے کے عادی ہیں۔انہوں نے کہا کہ سندھ کے عوام پانی کی مصنوعی قلت سے مررہی ہے، ملک کا معاشی حب اور سمندر کنارے بسا شہر کراچی پانی کی بوند بوند کو ترس رہا ہے، پانی کی مصنوعی قلت کے پیچھے بھی سندھ حکومت ہے، سندھ حکومت اور واٹر بورڈ کی ملی بھگت سے ٹینکر مافیا پروان چڑھا اور آج شہریوں کو انکا بنیادی حق و ضرورت پیسوں کے عوض دیا جاتا ہے۔

انہوں نےکہا کہ بلاول زرداری وفاق پر الزامات کی بارش سے قبل ایک بار اپنے صوبے پر نظر ثانی کریں، روٹی کپڑا اور مکان کے نام پر پیپلز پارٹی نے عوام سے پینے کو صاف پانی تک چھین لیا ہے، پیپلز پارٹی کے وزراء نے کرپشن کر کے تمام شعبہ جات کی جڑوں کو کھوکھلا کردیا ہے،سندھ میں اس وقت ایمرجنسی لگانے کی ضرورت ہے۔

خرم شیر زمان نے مزید کہا کہ سندھ حکومت ہر سال بجٹ میں نئے نئے ناموں کی سکیمیں شامل کرکے فنڈز پر ہاتھ صاف کرتی ہے، نیب حکام سندھ میں جاری بدعنوانیوں کا نوٹس لیں اور کرپشن کے تمام معاملات کی شفاف تحقیقات کریں۔

You may also like

%d bloggers like this: