اسلام آباد چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے کیس میں ریمارکس دیتے ہوئے کہاہے کہ وزیراعظم ٹھیک کہتے ہیں 2 پاکستان ہیں ،ایک پاکستان امیر اور طاقتور کیلئے اور دوسرا غریب کیلئے۔ نجی ٹی وی سما نیوز کے مطابق چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ نے مقدمے کی سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ اسلام آباد میں اشرافیہ کاقبضہ ہے اور غریب کو اراضی کامعاوضہ بھی نہیں ملتا ،وزیراعظم ٹھیک کہتے ہیں 2 پاکستان ہیں ،ایک پاکستان امیر اور طاقتور کیلئے اور دوسرا غریب کیلئے۔ عدالت بے گھر افراد کو معاوضوں کی عدم ادائیگی پر سی ڈی اے پر برہم ہو گئی،چیف جسٹس ہائیکورٹ نے کہاکہ وفاقی ترقیاتی ادارے سی ڈی اے کو شرم سے ڈوب مرنا چاہئے،جن سے باپ دادا کی زمینیں چھینی گئیں وہ معاوضوں کیلئے دھکے کھا رہے ہیں ۔

وزیراعظم ٹھیک کہتے ہیں 2 پاکستان ہیں، چیف جسٹس اطہر من اللہ

By

اسلام آباد چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ جسٹس اطہر من اللہ نے کیس میں ریمارکس دیتے ہوئے کہاہے کہ وزیراعظم ٹھیک کہتے ہیں 2 پاکستان ہیں ،ایک پاکستان امیر اور طاقتور کیلئے اور دوسرا غریب کیلئے۔

نجی ٹی وی سما نیوز کے مطابق چیف جسٹس اسلام آبادہائیکورٹ نے مقدمے کی سماعت کے دوران ریمارکس دیتے ہوئے کہاکہ اسلام آباد میں اشرافیہ کاقبضہ ہے اور غریب کو اراضی کامعاوضہ بھی نہیں ملتا ،وزیراعظم ٹھیک کہتے ہیں 2 پاکستان ہیں ،ایک پاکستان امیر اور طاقتور کیلئے اور دوسرا غریب کیلئے۔

عدالت بے گھر افراد کو معاوضوں کی عدم ادائیگی پر سی ڈی اے پر برہم ہو گئی،چیف جسٹس ہائیکورٹ نے کہاکہ وفاقی ترقیاتی ادارے سی ڈی اے کو شرم سے ڈوب مرنا چاہئے،جن سے باپ دادا کی زمینیں چھینی گئیں وہ معاوضوں کیلئے دھکے کھا رہے ہیں ۔

You may also like