یہ وہ رپورٹ نہیں جو جے آئی ٹی نے ریلیز کی ،وفاقی وزیر علی زیدی کی چیف جسٹس سپریم کورٹ سے نوٹس لینے کی اپیل

By

وفاقی وزیر علی زیدی نے کہاہے کہ یہ وہ رپورٹ نہیں جو جے آئی ٹی نے ریلیز کی ،جے آئی ٹی کی رپورٹ کے ہر صفحے پر دستخط ہیں ،جے آئی ٹی میں 6 لوگ تھے، اس رپورٹ میں ان کے دستخط نہیں جو سندھ حکومت کے ماتحت تھے ،وفاقی وزیر نے کہاکہ میں چیف جسٹس آف پاکستان سے اپیل کرتا ہوں کہ اس معاملے پر ازخود نوٹس لیں،جس کا بھی نام جے آئی ٹی میں ہے اس سے تفتیش کی جائے۔

وفاقی وزیر علی زیدی نے سینٹر شبلی فراز کے ہمراہ پریس کانفرنس کرتے ہوئے کہاکہ گزشتہ رات سے جے آئی ٹی سے متعلق بات کی جارہی ہے ،ترقی یافتہ ممالک میں دائیں اوربائیں بازوکی سیاست ہوتی ہے،پاکستان میں صحیح اورغلط کی سیاست کی جا رہی ہے،تحریک انصاف ملک بدلنے اور صحیح راہ پر لانے کیلئے اقتدار میں آئی ہے ،ملک کو درست ڈگر پر ڈالنے کیلئے سزاوجزاکانظام لاگو کرناہوگا،ہم بڑی جدوجہد کے بعداقتدارمیں آئے،علی زیدی نے کہاکہ ہم انتظار کررہے تھے کہ سندھ حکومت جے آئی ٹی رپورٹ پبلک کرے،اللہ اللہ کرکے سندھ حکومت نے جے آئی ٹی رپورٹ پبلک کردی،جے آئی ٹی رپورٹس پبلک کرانے کیلئے عدالت میں طویل جدوجہد کرنی پڑی ،2017 میں چیف سیکرٹری سندھ کو میں نے خط لکھا،2017 میں چیف سیکرٹری سے جے آئی ٹی رپورٹ مانگی ،عدالتی حکم کے باوجود سندھ حکومت نے جے آئی ٹی پبلک نہیں کی،پیپلزپارٹی کے ایک وزیراعظم توہین عدالت پر پہلے نااہل ہو چکے ہیں جو لوگ بجٹ پر تقریر فرما رہے ہیں وہ تو گینگسٹر کے لیڈر ہیں ۔

Leave a Comment

Your email address will not be published.

This site uses Akismet to reduce spam. Learn how your comment data is processed.

You may also like

Hot News